supreme_court-asked-political-parties-submit-receipt-election_bond

سپریم کورٹ نے تمام سیاسی جماعتوں کو انتخابی بانڈ کی رسید جمع کرنے کو کہا

سپریم کورٹ نے تمام سیاسی جماعتوں کو انتخابی بانڈ کی رسید جمع کرنے کو کہا

نئی دہلی،12؍اپریل (آئی این ایس انڈیا)

سپریم کورٹ نے جمعہ کو تمام سیاسی جماعتوں کو ہدایت دی کہ وہ انتخابی بانڈ کی رسیدیں اور عطیہ کرنے والوںکی شناخت کی تفصیلات مہر بند لفافے میں الیکشن کمیشن کو سونپے۔عدالت عظمی نے تمام سیاسی جماعتوں کو ہدایت دی کہ وہ انتخابات پینل کو 30 مئی تک عطیہ رقم اور عطیہ کرنے والے کے بینک اکاؤنٹ کی تفصیلات پیش کرے۔یہ ہدایت چیف جسٹس رنجن گوگوئی، جسٹس دیپک گپتا اور جسٹس سنجیو کھنہ کی بنچ نے دیا۔یہ حکم ایک تنظیم کی درخواست پر دیا گیا۔اس میں اس کی منصوبہ بندی کی قانونی حیثیت کو چیلنج دیتے ہوئے کہا گیا تھا کہ یا تو انتخابی بانڈ کو جاری کرنا ملتوی ہو یا انتخابی عمل میں سلاست برقرار رکھنے کے لئے عطیہ کرنے والوںکے نام اجاگر کئے جائیں۔حکومت نے دو جنوری، 2018 کو انتخابی بانڈ منصوبہ بندی کو مطلع کیا تھا۔ منصوبہ بندی کی دفعات کے مطابق انتخابی بانڈ کو ایسا کوئی شخص خرید سکتا ہے جو ہندوستان کا شہری ہے یا کمپنی جو ہندوستان میں قائم ہے۔ایک شخص ذاتی طور پر ایک یا دوسروں کے ساتھ مل کر انتخابی بانڈ خرید سکتا ہے۔عوامی نمائندگی قانون 1951 کی دفعہ 29 ا کے تحت صرف ایسے رجسٹرڈ سیاسی جماعتیں جنہوں نے گذشتہ انتخابات میں کم از کم ایک فیصد تک ووٹ حاصل کی ہوں، وہ ہی انتخابی بانڈ حاصل کرنے کی اہل ہوسکتی ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں