shev_sena-advised-bjp-speak-rafael-deals

شیوسینا نے رافیل سودے پر بی جے پی کو’کم بولنے‘ کا مشورہ دیا

شیوسینا نے رافیل سودے پر بی جے پی کو’کم بولنے‘ کا مشورہ دیا

ممبئی،12؍اپریل (آئی این ایس انڈیا)

شیوسینا نے جمعہ کو اپنی اتحادی پارٹی بھارتیہ جنتا پارٹی کو مشورہ دیا کہ وہ رافیل سودے پر ’کم بولے‘، جس کو لے کر کانگریس بدعنوانی کے الزام لگا رہی ہے۔شیوسینا نے خبردار کیا کہ غیر ضروری بیان بازی سے نیشنل پارٹی کی مشکلیں بڑھ سکتی ہیں۔ شیوسینا نے کہا کہ اگر بی جے پی وزیر اعظم نریندر مودی کی انتخابی ریلیوں کو الیکٹرانک میڈیا میں مل رہی کوریج سے مطمئن رہتی تو نمو ٹی وی پر پابندی سے بچا جا سکتا تھا۔ادھو ٹھاکرے کی قیادت والی پارٹی نے جلگائوں میں ایک جلسہ عام کے دوران مہاراشٹر کے وزیر گریش مہاجن کے سامنے بی جے پی کارکنوں کے درمیان ہوئی حالیہ جھڑپ کو لے کر بھی قومی پارٹی پر نشانہ لگایا۔پارٹی نے کہا کہ چونکانے والی ویڈیو (تنازعہ) ملک بھر میں دیکھا گیا۔بی جے پی نے پارٹی میں غنڈوں کی بھرتی کی اور انہیں ’والمیکی‘ میں تبدیل کر دیا۔حالانکہ یہاں تجربہ کار والمیکی غنڈوں میں بدل گئے دیا اور تشدد میں شامل ہو گئے۔اس نے کہاکہ یہ نہ صرف بی جے پی شیوسینا اتحادکی تشہیر پر دھبہ ہے بلکہ وقت آ گیا ہے جب بی جے پی کو اس پر اپنا رخ واضح کرنا چاہئے۔شیو سینا نے کہاکہ کم از کم رافیل کے معاملے پر، انہیںتحمل کے ساتھ بات چیت کی ضرورت ہے۔وزیر دفاع سے لے کر دوسرے لیڈروں تک، لوگ (بی جے پی میں) جو چاہ رہے ہیں وہ بول رہے ہیں۔اس سے پارٹی کی مشکلیں بڑھ سکتی ہیں اس لئے ہمارا مشورہ ہے کہ جتنا کم بولا جائے اتنابہتر ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں