seeking-hajj-pay-learning-issues-and-focus-meditation-hajj_committee-ts

عازمین کو توجہ کے ساتھ مناسک اور مسائل سیکھ کر فریضہ حج ادا کرنے کا مشورہ

عازمین کو توجہ کے ساتھ مناسک اور مسائل سیکھ کر فریضہ حج ادا کرنے کا مشورہ

حیدرآباد 7 اپریل (ایجنسیز)

مسٹر اے کے خان مشیر اقلیتی بہبود حکومت تلنگانہ نے عازمین حج کو مشورہ دیا ہے کہ وہ سفر حج کی تیاری کے لئے سب سے پہلے اپنی صحت کا خیال رکھیں‘ روزانہ پیدل چلنے کی عادت ڈالیں اور ورزش کرتے رہیں۔ آج تلنگانہ اسٹیٹ حج کمیٹی کے زیر اہتمام بو زئی فنکشن ہال بالا نگر حیدرآباد میں عازمین حج کے تیسرے تربیتی اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے عازمین سے کہا کہ حج کے دوران بہت زیادہ پیدل چلنے کی عادت ڈالیں‘ کیونکہ ایام حج میں حاجیوں کو مکہ سے منیٰ‘ عرفات اور مزدلفہ کے مقامات پر زیادہ تر پیدل ہی چلنا پڑتا ہے۔ انہوں نے عازمین کو مشورہ دیا کہ وہ اپناوقت عبادتوں میں گذاریں اور فون پر زیادہ وقت صرف نہ کریں کیونکہ فون کے زیادہ استعمال سے عبادتوں میں خلل پڑتا ہے۔
مولانا مفتی صادق محی الدین فہیم نے کہا کہ اللہ نے زندگی تمام میں حج ایک مرتبہ حج فرض فرمایا ہے وہ بھی ان اصحاب پر جو صاحب استطاعت ہوں۔ انہوں نے عازمین کو مشورہ دیا کہ وہ حج کی عبادت کرنے سے قبل توجہ اور احتیاط کے ساتھ حج کے احکام و مناسک سیکھ کر فریضہ اد کریں ۔ انہوں نے عمرہ اور حج کے مناسک و مسائل پر روشنی ڈالتے ہوئے بتایا کہ عمرہ میں دو فرض اور دو واجب ہیں اور حج میں تین فرض اورچھ واجبات ہیں جن کی انہوں نے تفصیلی وضاحت کی اور سمجھایا کہ عمرہ اور حج کے مناسک کیسے ادا کئے جاتے ہیں ۔ انہوں نے تفصیل کے ساتھ مناسک حج و عمرہ بیان کئے اور کہا کہ ترتیب کے ساتھ مناسک کو یاد رکھیں تو کوئی دشواری نہیں ہوگی۔ مولانا نے کہا کہ کعبتہ اللہ کے احترام کو ہمیشہ پیش نظر رکھیں۔ جو حدود حرم سے باہر رہنے والے ہیں ان کو آفاقی کہا جاتا ہے اور ان کے لئے ضروری ہے کہ وہ جب بھی حرم کو جائیں تومیقات سے احرام باندھ کر جائیں۔
مولانا نے کہا کہ احرام صرف دو چادروں کا نام نہیں بلکہ ان چھ چیزوں کی پابندی کا نام ہے جو احرام کی نیت کرنے کے بعد لازم ہوجاتی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ حج مبرور کی جزا جنت ہے ‘ یہ سعادت حاصل کرنے کے لئے آپ روانگی سے قبل تمام لوگوں سے معافی مانگ لیں اور رجوع الیٰ اللہ ہوجائیں۔ ایکزیکٹیو آفیسر تلنگانہ اسٹیٹ حج کمیٹی جناب ایم اے وحید نے اپنے صدارتی خطاب میں کہا کہ حکومت نے ان کو حج کمیٹی کے ایکزیکٹیو آفیسر کی ذمہ داری سونپی ہے جسے وہ اپنی خوش بختی سمجھتے ہیں۔ انہوں نے عازمین حج کو مبارکباد دیتے ہوئے کہا کہ وہ حقیقی معنوں میں خوش نصیب ہیں کہ اللہ تعالیٰ نے ان کو اپنا مہمان بنانا پسند کیا ہے‘ اس لئے ان کو اس کے شایان شان تیاری بھی کرنی چاہئے۔ انہوں نے یقین دلایا کہ عازمین کی روانگی اورو اپسی کے لئے بہترین و عمدہ انتظامات کئے جائیں گے اور کوئی کسر نہیں چھوڑی جائے گی۔
انہوں نے سفر حج کے انتظامات پر روشنی ڈالتے ہوئے عازمین کرام کو مشورہ دیا کہ وہ ہر مرحلہ پر صبر و شکر ‘ عفو و درگذر کی عادت ڈالیں‘ اپنے نفس پر قابو پائیں تو انشأ اللہ ان کا حج بہت ہی آسان ہوجائے گا ۔ جناب ایم اے وحید نے کہا کہ اس مرتبہ حیدرآباد امبارکیشن پوائینٹ سے حجاج کرام کی روانگی دوسرے مرحلہ میں عمل میں آئے گی اور حاجی صاحبان حالت احرام میں براہ جدہ مکہ مکرمہ پہنچیں گے۔ انہو ں نے بتایا کہ ویٹنگ لسٹ کے تحت 308عازمین کا انتخاب عمل میں آیا ہے اور توقع ہے کہ دوسری ویٹنگ لسٹ بھی بہت جلد آجائے گی۔درخواست گزاروں کا ویٹنگ لسٹ کے مطابق ہی انتخاب ہوگا اس لئے وہ کسی کی باتوں میں نہ آئیں ‘ مولانا مفتی سید ضےأ الدین نقشبندی نے زیارت روضہ نبوی ﷺ کے آداب پر تفصیلی روشنی ڈالی اور کہا کہ مدینہ منورہ مسلمانوں کے لئے بہت ہی عقیدت اور ادب و احترام کا مقام ہے۔ یہ انتہائی ضروری ہے کہ اس شہر مقدس میں اپنی آواز بھی پست رکھی جائے اور یہاں کی کسی بات پر اعتراض نہ کیا جائے۔ ورنہ اعمال حبط ( ختم) ہوجائیں گے اور تم کو خبر بھی نہیں ہوگی۔
انہو ں نے کہا کہ دربار مصطفیٰ ﷺ میں انتہائی احترام و عقیدت کے ساتھ حاضری دیں ۔ انہوں نے مدینہ منورہ کی دیگر زیارت گاہوں کا بھی ذکر کیا اورکہا کہ جو وضو کرکے مسجد قبا جائے اور وہاں دو رکعت نماز ادا کرے تو اس کو ایک مقبول عمرہ کا ثواب ملے گا۔ مولانا حافظ تنویر ندوی کی قرأت کلام پاک اور جناب عمر قادری ال جنیدی انجنےئر کی نعت شریف سے جلسہ کا آغاز ہوا۔ خواتین کے لئے علیحدہ انتظام کیا گیا تھا۔ اے ای او حج کمیٹی جناب عرفان شریف اور تلنگانہ مسلم مائیناریٹی ویلفیر اسوسی ایشن کے عہدیداروں مسرز شکیل صدیقی صدر‘ محمد ےٰسین نائب صدر اور محمد ہاشم جنرل سکریٹری اور محمد متین جوائنٹ سکریٹری نے انتظامات کی نگرانی کی۔ اس موقعہ پر اسوسی ایشن کی جانب سے دو غریب لڑکیوں کی شادی بھی انجام دی گئی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں