addressing-big_rally-mahagatbandhan-candidate-fazlur_rehman-danger-dalit-wislam-sect

گٹھ بندھن امیدوار فضل الرحمان کا بڑی ریلی سے خطاب،بھگوا نظریہ دلت ومسلم طبقہ کے ساتھ ساتھ ا من کیلئے خطرہ!

گٹھ بندھن امیدوار فضل الرحمان کا بڑی ریلی سے خطاب
بھگوا نظریہ دلت ومسلم طبقہ کے ساتھ ساتھ ا من کیلئے خطرہ!

سہارنپور8؍اپریل (احمد رضا سہارنپور)

گٹھ بندھن کی دیوبند ریلی کو کامیاب چنائوی ریلی قرار دیتے ہوئے گٹھ بندھن امیدوار حاجی فضل الرحمان نے صاف کیا کہ بہن جی اور اکھلیش کی لاکھوں ووترس کی بھیڑ والی ریلی ویسٹ اتر پردیش میں بھاجپائی شکست کا راز فاش کرچکی ہے بھاجپائی مات طے ہے بس ووٹرس کا ایک پلیٹ فارم پر رہکر ووٹ پول کرنا لازمی ہے! بہوجن سماج پارٹی کے سینئر قائد اور گٹھ بندھن امیدوار حاجی فضل الرحمان علیگ نے کھاتہ کھیڑی (ووڈین سٹی) میں آج ایک بڑی ریلی کو خطاب کرتے ہوئے کہاکہ بی ایس پی ہی ملک کے دلتوں، دبے کچلے،پسماندہ اورغریب لوگوں کے ساتھ ساتھ اقلیتوں کی بیباک محافظ ہے مایاوتی سرکار کی عمدہ کارکردگی کو ایک تاریخی دور قرار دیتے ہوئے کہا کہ گٹھ بندھن ایک تاریخ بنانے جارہاہے عوام کو ساتھ دیناہے گٹھ بندھن آپکا بندھن ہے! گٹھ بندھن امیدوار حاجی فضل الرحمان علیگ نے زوردار لہجہ میں کہاہیکہ گٹھ بندھن کا ایجنڈہ ملک کے پچاسی فیصد پست، پچھڑے اور کمزور طبقات کوآگے بڑھانے والا رہا ہے! سینئر قائد فضل الرحمان علیگ نے کہا کہ ملک میں گزشتہ پانچ سالہ بھاجپائی دور اقتدار میں تمام طبقات کو زبردست نقصان پہنچایاگیاہے ساتھ ہی ساتھ مسلم اور دلت طبقات کو بنیادی حقوق اور ووٹ سے محروم رکھنے کی سازشیں بھی کھلے عام ہورہی ہیں ! گٹھ بندھن امیدوار حاجی فضل الرحمان علیگ نے کہاکہ ملک کی پانچ ریاستوں میں اسی تکبر اور ظالمانہ برتائو کے سبب آج بھاجپا کو عوام نے کرسی سے نیچے اتار کر دیگر جماعتوں کو اقتدار سونپ دیاہے جو بہتر آغاز ہے اس بار آپکے ووٹ سے مرکز میں گٹھ بندھن ہی کی سرکار بنے گی آپ کسی کے بہکاوے میں مت آئیں بلکہ مایاوتی بہن اور بھائی اکھلیش کے ہی امیدواروں کو بھاری حمایت اور ووٹ سے جتائیں تاکہ گٹھ بندھن مضبوط ہوسکے! آپنے کہا کہ بی ایس پی سپریموبہن مایاوتی نے ہمیشہ مظلوموںکیلئے انصاف کی آوازکوبلندکیا ہے بسپا چیف بہن مایاوتی نے ہی ا پنی سرکار میں تمام طبقات کی فلاح و بہبودکیلئے مختلف منصوبوں کی شروعات کرکے سبھی کی ترقی کیلئے کام کیا اور پچاسی فیصد پست، پچھڑے اور کمزور طبقات کوآگے بڑھا کر انکو قو می دھارا سے جوڑا ہے یہی عمل لگاتار جاری ہے اسلئے ملک کے امن و استحکام کیلئے بہوجن سماج پارٹی کا اتر پردیش میں اقتدار میں آنا پچاسی فیصد عوام کی بہتری اور بھلائی کیلئے آج بیحد ضروری ہے، بی ایس پی قائد نے کہاکہ بی جے پی پر آرایس ایس کے اشارہ پر کام کرنے کا الزام لگایا اورکہا کہ دلتوں و پچھڑوں یس ریزرویشن کو چھیننے کا کام کیا جا رہا ہے بی جے پی کاایجنڈہ صرف فرقہ پرستی پھیلاکر لوگوں کے درمیان نفرت پیداکرنا ہے اسلئے لوگوں کوبی جے پی سے ہوشیاررہنا چاہئے ملک میں کسانوں کی جو حالت ہے وہ سب کے سامنے ہے،ماب لنچنگ کے نام پر لوگوںکاقتل عام بات ہو گئی ہے سپریم کورٹ کو ملک کے حالات پر تبصرہ کرنا پڑا ایسے میںمعلوم ہوتا ہے کہ بھاجپا اقتدار سے ملک میں افراتفری زیادہ پھیلی ہے!بہوجن سماج پارٹی کے سینئر قائد حاجی فضل الرحمن علیگ نے زور دیکر کہا کہ ایک سروے سے ثابت ہوا ہیکہ بھاجپا نے ۲۰۱۴ لوک سبھا الیکشن سے قبل لوگوں سے جو وعدے کئے انھیں کسی بھی صورت آج تک پورا نہیں کیا گیا بسپا لیڈرنے کہا کہ ہندو مسلم کے بیچ کھائی کھودنے کے ساتھ ساتھ فرقہ پرستی کو بڑھاوا دیکر مندر مسجد کے مدعے کو اٹھاکر ملک کو آگ میں جھلسانیکا کام کیاگیا جو ملک کی ایکتا اور امن کے لئے بڑا خطرہ ہے اسکے علاوہ جی ایس ٹی اور نوٹ بندی کے نام پر تاجروں کی کمر توڑ دی گئی اور اسکا فائدہ بڑے صنعت کاروں کو ہوا جو عوام کا کروڑوں روپیہ بینکوں سے لون کی شکل میں لیکر فرار ہو گئے انھوں نے بڑھتی ہوئی مہنگائی اور پیٹرول و ڈیزل کی قیمتوں میں اضافہ پر مرکزی حکومت کو نشانہ پر لیتے ہوئے کہا کہ سرکار پیٹرول و ڈیزل کو جی ایس ٹی کے دائرہ میں لاکر لوگوں کو راحت دینے کا کام کرے بسپا لیڈر حاجی فضل الرحمن علیگ نے کسانوں کے مسائل کے سلسلہ میں مودی حکومت پر بے توجہی کا الزام عائد کرتے ہوئے کہا کہ کسانوں پر حق مانگنے پر لاٹھیاں دی جا رہی ہیں ملک میں مودی حکومت کے ساڑھے چارسالہ دور میں چالیس ہزار افراد معاشی تنگی اور سرکاری قرض کے بوجھ سے دب کر خد کشی کرچکے ہیں جو ملک کے کسانوں کیلئے افسوسناک حالت ہے اسلئے اس اقتدار کا خاتمہ ضروری ہوگیاہے! فوٹو۔۔ حاجی فضل الرحمان

کیٹاگری میں : هوم

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں