smriti_irani-surrounded-pm_funds-resign-immediately-congress

اسمرتی ایرانی نےایم پی فنڈ میں گھپلہ کیا، فوراً استعفیٰ دیں: کانگریس

اسمرتی ایرانی نےایم پی فنڈ میں گھپلہ کیا، فوراً استعفیٰ دیں: کانگریس

نئی دہلی،14مارچ(ایجنسیز)

کانگریس نے الزام عائد کیا کہ مرکزی وزیر اسمرتی ایرانی نے ایم پی فنڈ کے استعمال میں ضابطوں کی کی خلاف ورزی کی ہے اس لیے انھیں مرکزی کابینہ سے فوراً ہٹاکر ان کے خلاف انسداد بد عنوانی ایکٹ کے تحت ایف آئی آر درج کی جانی چاہیے۔
کانگریس کے میڈیاسیل کے سربراہ رندیپ سنگھ سورجے والا اور گجرات کانگریس کے قد آور رہنما شکتی سنگھ گوہل نے جمعرات کو یہاں مشترکہ پریس کانفرنس میں کہا کہ محترمہ ایرانی نےایم پی فنڈ کے استعمال میں ضابطوں کی پرواہ کیے بغیر بی جے پی کارکنان کی ایک تنظیم کو کام دیا ہے۔ اس سلسلے میں ضروری ٹینڈر نکالنے کے ضابطے پر عمل درآمد نہیں کیا گیا اور چھ کروڑ روپیے سے زیا دہ کا ٹھیکہ مذکورہ تنظیم کو دیا گیا۔
انہوں نے کہا کہ گجرات میں آنند کے ضلع افسر نے اس کی شکایت مرکزی حکومت سے کی تو معاملے کی تفتیش کرائی گئی جس میں ضابطوں کی خلاف ورزی پائی گئی۔ محترمہ ایرانی کی ایم پی فنڈ میں مالی ضابطوں کی خلاف ورزی کی بات کمپٹرولراینڈ آڈیٹر جنرل (سی اے جی) نے بھی کی ہے اور کہا ہے کہ ایم پی فنڈ کے استعمال میں ضابطوں پر عمل درآمد نہیں کیا گیا۔ معاملے کی سرکاری سطح پر تفتیش کی گئی جس میں واضح غلطی پائی گئی اور چار کروڑ آٹھ لاکھ روپیے سے زیادہ کی رقم وصولنے کو کہا گیا۔
ترجمانوں نے کہا کہ سرکاری تفتیش میں بھی مرکزی وزیر کی ایم پی فنڈ میں مالی خلاف ورزی سامنے آئی ہے اس لیے انھیں اخلاقی طور پر خودہی مستعفیٰ ہو جانا چاہیے اور اگر وہ عہدہ نہیں چھوڑتی ہیں تو انھیں فوراً ہٹایا جانا چاہیے اور ان کے خلاف ایف آئی آر درج ہونی چاہیے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں