country-self-determination-dangerous-fazlur-rahman

!ملک کو اپنی مرضی سے چلانے والی سوچ خطرناک! فضل الرحمن علیگ

!ملک کو اپنی مرضی سے چلانے والی سوچ خطرناک! فضل الرحمن علیگ

سہارنپور،13؍مارچ( خاص رپورٹ :احمد رضا رسہارنپور)

بہوجن سماج پارٹی اور سماجوادی اتحاد کے امیدوار حاجی فضل الرحمن علیگ نے اپنی درجن بھر ریلیوں میں عوامی خطاب میں کہا کہ آج ملک میں آئین کے خلاف آئین میں چوری چھپے ترمیم کئے جانیکی سازشیں کی جا رہی ہے ہم اسکی سخت مذمت کرتے ہیں، بابا صاحب بھیم راؤ امبیڈکر کی زیر سرپرستی تشکیل ہمارے ملک کا قابل فخر آئین جو آج ہم سبھی کو ملک میں آزادی کے ساتھ رہنے، تجارت کرنے، تعلیم حاصل کرنے، سچ کو سچ کہنے اور اپنے اپنے مذہب کو ماننے کی مکمل آزادی دیتا ہے اس پاک نظریہ آئین کو بی جے پی اور سنگھ پریوار کے لوگ من مرضی میں ڈھالنا چاہتے ہیں یہ ایک خطرناک سوچ ہے ملک کا پچاسی فیصد پچھڑا سماج اس سازش کو کسی بھی شکل میں برداشت نہی کریگا ملک کو آر ایس ایس کی سوچ سے چلانیوالے کامیاب نہی ہوں گے یہی ہمارا مقصد ہے یہی ہماری جدوجہد رہیگی!
لوک سبھا امید وار حاجی فضل الرحمان نے کہا کہ بی جے پی اور سنگھ پریوار کے لوگ زور زبردستی سے انصاف کی آواز کو دبا نہیں سکتے مہا گٹھ بندھن ۲۰۱۹ کے لوک سبھا چنائو میں بھاجپائی اقتدار کو اکھاڑ پھینکے کیلئے آج متحدہوچکاہے کوئی بھی موقع پرست طاقت ہمارے اتحاد اور بھائی چارے کو ختم نہی کرسکتی ہیں بسپا امیدوار نے کہا کہ بہوجن سماج پارٹی ایک مشن ہے جو دبے کچلے اور کمزوروں کی آواز اٹھانے کا کام کر رہی ہے بسپا قائد نے کہا کہ ملک میں جو طاقتیں کمزوروں پر ظلم کر رہی ہیں وہ اب زیادہ دن اقتدار میں رہنے والی نہیں ہے کیونکہ ملک کا عوام اب تبدیلی کی طرف چل پڑی ہے راجستھان، مدھیہ پردیش اور چھتیس گڑھ کے اسمبلی نتائج اسکی عمدہ نظیر ہے کہ عوام اب بھاجپائی سرکاروں سے تنگ آچکی ہے اور اقتدار بدلنے پر بضد ہے اسلئے متحد ہوکر ووٹ دینا ضروری ہوگیاہے! بسپا کے مہانگر صدر فیضان الرحمن نے بھی کارکنوں سے بھاری تعداد میں کانفرنس میں پہنچنے کی اپیل کی اور کہا کہ بابا صاحب نے جو خواب دیکھا تھا بہوجن سماج پارٹی اسی مشن پر آگے بڑھ رہی ہے اسی مشن کو مزید طاقتور بنا نا ضروری ہوگیا ہے !اس موقع پر نگر نگم کے ۲۷ کونسلرس نے حاجی فضل الرحمان کی حمایت کا اعلان کرتے ہوئے عوام سے مقبول امیدوار بھائی فضل الرحمان کو کامیاب بنانے کی اپیل کی مقامی ہوٹل کلارک کے پریس کانفرنس ہال گھما گہمی کے بیچ موجود افراد نے اپنے امیدوار کو جتانیکا عزم دہرایا اور کہاکہ کمشنری کی سبھی سیٹوں پر بھاجپا کے امیدواروں کی ہار یقینی ہے کل کی اہم میٹنگ میں بھی بسپا کونسلر لیڈر چندرجیت سنگھ نکو، کونسلر ڈاکٹر احسان، ضلع نائب صدر راؤ بابر، انکت جاٹو، عرشی حسن، چرن سنگھ پرجاپتی، سمت اروڑہ، سید حسان، ڈاکٹر مہاویر بڑھانا، ماسٹر امجد، ریحان خان، چودھری ستپال، ساگر شرما، نثار انصاری، ایس عالم، تجمل حسن، وصی خان، ونود کمار، دیپک رائے، سوراج سنگھ، مون، حمزہ، ایشان انصاری، موسی قریشی، پاشا، سابق کونسلر ماسٹر غفور، افتخار حسن وغیرہ کی موجودگی کافی اہم مانی جا رہی ہے! فوٹو۔۔ حاجی فضل الرحمان

کیٹاگری میں : هوم

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں