west-bengal-41-percent-seats-field-elections-mamata-banerjee-released-candidate-list

مغربی بنگال: 41 فیصد سیٹوں پرانتخابی میدان میں اتریں گی خواتین . ممتا بنرجی نے جاری کی امیدوارکی فہرست

مغربی بنگال: 41 فیصد سیٹوں پر انتخابی میدان میں اتریںگی خواتین
ممتا بنرجی نے جاری کی امیدوارکی فہرست

کولکاتہ ،12 مارچ(آئی این ایس انڈیا)

لوک سبھا انتخابات کی تاریخوں کے اعلان کے بعد مغربی بنگال میں منگل کو ترنمول کانگریس (ٹی ایم سی) نے امیدواروں کے ناموں کا اعلان کیا۔بتا دیں کہ مغربی بنگال میں کل 42 لوک سبھا سیٹیں ہیں، جن پر ٹی ایم سی ، سی پی آئی (ایم) کی قیادت والے لیفٹ فرنٹ، کانگریس اور بی جے پی کے درمیان مقابلہ ہوگا۔مغربی بنگال کی وزیر اعلی اور ٹی ایم سی لیڈر ممتا بنرجی نے کہاکہ لوک سبھا انتخابات میں ترنمول کانگریس 40.5 فیصد خواتین امیدواروں کو انتخابی میدان میں اتارے گی۔یہ ہمارے لئے ایک فخر کا لمحہ ہے۔ٹی ایم سی سربراہ ممتا بنرجی نے بتایاکہ آسنسول سے ہماری امیدوار مون مون سین ہوں گی اور بیربھوم سے ستابدی رائے کو امیدوار بنایا گیا ہے۔ممتا بنرجی نے اس بات کا بھی اعلان کیا کہ فلمی ستارے نصرت جہاں، ملی چکرورتی بھی ٹی ایم سی کی جانب سے اس بار انتخابی میدان میں اتریں گے۔ایکٹر اور گھاٹل سے ممبر پارلیمنٹ دیو (دیپک ) پھر سے اپنی پرانی سیٹ سے ہی الیکشن لڑیں گے۔یہ بھی بتا دیں کہ ٹی ایم سی نے بی جے پی کے رہنما بابل سپریو کے خلاف آسنسول سے پہلے اداکارہ مون مون سین کو انتخابی میدان میں اتارا ہے۔ممتا بنرجی نے اعلان کیا کہ پارٹی کے ساتھ طویل وقت سے منسلک ٹی ایم سی رہنما سبرت مکھرجی بانکرا سے الیکشن لڑیں گے ۔یہ سیٹ اس سے پہلے فلم اداکارہ مون مون سین کے پاس تھی۔ادھرمانس رنجن بھوئیاں میدنی پور سے انتخابی میدان میں اتریں گے۔لوک سبھا انتخابات کے لئے ٹی ایم سی امیدواروں کے ناموں کے اعلان سے پہلے ممتا بنرجی نے پانچ موجودہ ممبران پارلیمنٹ کے نام بتائے، جو کئی وجوہات سے انتخابی میدان میں نہیں اتریں گے۔ممتا نے کہاکہ جادو پور سے رہنما سگاتا بوس کو ہارورڈ یونیورسٹی سے الیکشن لڑنے کی اجازت نہ ملنے کی وجہ سے وہ انتخابی میدان میں نہیں اتریںگی ۔بتا دیں کہ سگاتا ہارورڈ یونیورسٹی میں بطور پروفیسر ہیں۔ذاتی وجوہات کی وجہ سے سندھیا رائے بھی الیکشن نہیں لڑیں گی۔سینئر لیڈر سبرت بکشی اور اوما سورین پارٹی سے متعلق کام کریں گے۔آئندہ لوک سبھا انتخابات میں مغربی بنگال میں تمام ساتوں مراحل میں ووٹنگ ہوں گے۔پہلے مرحلے کی پولنگ 11 اپریل جبکہ ساتویں اور آخری مرحلے کی پولنگ 19 مئی کو ہوگی۔ ممتا نے یقین ظاہر کیا کہ ان کی پارٹی ریاست کی تمام 42 لوک سبھا سیٹوں پر جیت درج کرے گی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں