who-will-help-nirav-modi-agencies-inquire

نیرو مودی کی مدد کس نے کی، ایجنسیاں انکوائری کریں گی

نیرو مودی کی مدد کس نے کی، ایجنسیاں انکوائری کریں گی

ممبئی11 مارچ (آئی این ایس انڈیا)

برطانیہ کے معروف اخبار ’دی ٹیلیگراف ‘ کی طرف سے مفرور ڈائمنڈ تاجر نیرو مودی کے لندن میں ہونے کی خبر دینے کے بعد بھارتی تفتیشی ایجنسیاں اس بات کی جانچ میں مصروف ہو گئی ہیں کہ لندن میں کاروبار شروع کرنے میں اس کی مدد اس کے کسی ہندوستانی ساتھی نے تو نہیں ہے ۔’ دی ٹیلیگراف‘ نے دعوی کیا ہے کہ نیرو مودی نے ڈائمنڈ کا نیا کاروبار شروع کیا ہے، جس کاانتظام و انصرام وہ سوہو واقع آفس سے کر رہا ہے۔ ایک افسر نے بتایا کہ اخبار کی خبر اور دیگرشواہد کے سامنے آنے کے بعد ہم نے ایک ابتدائی تحقیقات شروع کی، جس میں انکشاف ہوا ہے کہ نیرو مودی برطانیہ کی ایک ویلتھ مینجمنٹ کمپنی کے ساتھ رابطے میں ہے، جس نے شاید لندن میں کاروبار شروع کرنے میں اس کی مدد کی ہو۔ ہم اس بات کی بھی تحقیقات کریں گے کہ اس کی مدد کسی ہندوستانی شناسا نے تو نہیں کی ہے۔ ’ٹیلیگراف ‘کی رپورٹ کے مطابق نیرو مودی اپنے نئے کاروبار کو آپریٹ سوہو واقع اپنے آفس کرتا ہے جو اس کے اپارٹمنٹ سے چند کلومیٹر کے فاصلے پر واقع ہے۔

کیٹاگری میں : هوم

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں