andhra-pradesh-multi-rational-election-competition

آندھرا پردیش میں کثیر رخی انتخابی مقابلے ہوںگے

آندھرا پردیش میں کثیر رخی انتخابی مقابلے ہوںگے

امراوتی11 مارچ (آئی این ایس انڈیا)

آندھرا پردیش میں 11 اپریل کو ہونے جا رہے لوک سبھا اور اسمبلی انتخابات میں مقابلہ کثیر رخی ہونے کا امکان ہے۔ حکمران ٹی ڈی پی سمیت اہم سیاسی جماعتوں کے لئے یہ ’ کرو یا مرو‘ کی جنگ مانی جا رہی ہے۔تلنگانہ کے الگ ہونے کے بعد اب اس ریاست میں 25 لوک سبھا اور 175 اسمبلی سیٹوں پر ووٹنگ کے لئے 3.71 کروڑ سے زیادہ تعلیم یافتہ ووٹر ہیں۔اب تک کوئی اہم اتحاد قائم نہ ہونے کے درمیان ریاست میں کثیر رخی مقابلہ ہونے کا امکان ہے کیونکہ حکمران ٹی ڈی پی، اہم اپوزیشن پارٹی وائی ایس آر کانگریس سمیت اہم جماعتوں تنہا انتخابی میدان میں اترنے کی تیاری ہے۔سال 2014 میں آرام سے انتخاب جیتنے والی ٹی ڈی پی کو اقتدار میں بنے رہنے کے لئے چیلنج کا سامنا کرنا ہوگا ،جبکہ اپوزیشن وائی ایس آر کانگریس سیاست میں خود کو ثابت کرنے کے لئے ہر حال میں جیتنا چاہے گی۔کانگریس آندھرا پردیش میں دوبارہ مضبوط ہونے کی کوشش میں ہے۔ اسے 2014 میں ریاست کی تقسیم کے بعد کراری شکست جھیلنی پڑی تھی۔بی جے پی کے لئے یہاں کچھ بھی داؤ پر نہیں ہے لیکن اس ریاست کی سیاست میں ا پنی حیثیت ثابت کرنے کی کوشش کرے گی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں