us-secretary-state-demands-strict-sanctions-iran

امریکی وزیر خارجہ کا عالمی برادری سے ایران پر زیادہ سخت پابندیوں کا مطالبہ

امریکی وزیر خارجہ کا عالمی برادری سے ایران پر زیادہ سخت پابندیوں کا مطالبہ

دبئی9 فروری ( آئی این ایس انڈیا )

امریکی وزیر خارجہ مائیک پومپیو نے زور دیا ہے کہ عالمی برادری کی جانب سے ایران کے خلاف زیادہ سخت پابندیاں عائد کرنے کی ضرورت ہے۔جمعے کے روز اپنی ٹویٹ میں انہوں نے کہا کہ ایران کی جانب سے ایک بار میزائلوں کا داغا جانا اس بات کی تصدیق کرتا ہے کہ جوہری معاہدے نے ایران کے میزائل پروگرام کو روکنے کے لیے کچھ نہیں کیا۔امریکی وزیر خارجہ کے مطابق ایران بیلسٹک میزائلوں کے میدان میں اپنی صلاحیتوں میں اضافے پر کام کر کے سلامتی کونسل کو چیلنج کر رہا ہے۔پومپیو نے باور کرایا کہ ایرانی میزائل پروگرام پر روک لگانے کے لیے زیادہ سخت بین الاقوامی پابندیاں عائد کی جانی چا ہیے۔امریکی وزارت خارجہ نے جمعرات کے روز اعلان کیا تھا کہ اسے بعض رپورٹوں سے معلوم ہوا ہے کہ ایران نے گزشتہ ماہ فضا میں سیٹلائٹ چھوڑنے کی ناکام کوشش کی۔ امریکی وزارت خاجہ نے تہران نے مطالبہ کیا کہ وہ اْن سرگرمیوں کو روک دے جن سے اقوام متحدہ کی قرار دادوں کی خلاف ورزی ہوتی ہے۔امریکی وزارت خارجہ کے ترجمان روبرٹ بیلاڈینو نے کہا کہ ہم ایرانی نظام سے یہ مطالبہ کرتے رہیں گے کہ وہ اْن تمام سرگرمیوں کو فوری طور پر روک دے جو سلامتی کونسل کی قرار داد 2231 کے ساتھ متصادم ہے۔ ان سرگرمیوں میں خلائی سواریوں کا بھیجا جانا بھی شامل ہے۔یاد رہے کہ معروف امریکی خبر رساں ایجنسی نے جمعرات کے روز اپنے طور پر بتایا تھا کہ سیٹلائٹ سے لی گئی تصاویر ظاہر کرتی ہیں کہ ایران نے دو روز قبل خلا میں ایک سیٹلائٹ بھیجنے کی ناکام کوشش کی۔ خبر رساں ایجنسی نے دنیا بھر میں راکٹوں اور سیٹلائٹس کے خلا میں بھیجے جانے کی نگرانی کرنے والی کمپنی ’ڈیجیٹل گلوب‘کے حوالے سے بتایا کہ منگل کے روز ایران کے شمالی صوبے سمنان میں ’امام خمینی مرکز‘سے ایک راکٹ چھوڑا گیا۔ بدھ کے روز سامنے آنے والی تصاویر سے معلوم ہوتا ہے کہ یہ راکٹ غائب ہو گیا جب کہ لانچنگ پلیٹ فارم پر آگ لگنے کی علامات نظر آئیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں