1

کانگریس ایک ایک ووٹر کی تصدیق کرے گی: سرجے والا

بھوپال، 12 اکتوبر(ایجنسیز) سپریم کورٹ کی طرف سے مدھیہ پردیش اور راجستھان میں ووٹر لسٹ میں مبینہ گڑبڑی کے خلاف کانگریس رہنما کمل ناتھ اور سچن پائلٹ کی عرضیوں کو مسترد کردئے جانے کے بعد کانگریس نے کہا ہے کہ وہ اب ایک ایک ووٹر کی تصدیق کرکے اسے الیکشن کمیشن کے سامنے پیش کرے گی۔آل انڈیا کانگریس کمیٹی کے میڈیا انچارج رندیپ سنگھ سرجے والا نے آج یہاں اس سلسلے میں نامہ نگاروں کی طرف سے پوچھے گئے سوال کے جواب میں کہا کہ کانگریس نے ساٹھ لاکھ فرضی ووٹروں کی نشاندہی کی تھی ۔ الیکشن کمیشن نے جب اس کا نوٹس نہیں لیا تو انہوں نے سپریم کورٹ کا دروازہ کھٹکھٹایا ۔ عدالت سے کہا گیا کہ ٹیکسٹ موڈ میں سرچ کا متبادل نافذ کئے جانے سے فرضی ووٹروں کی تصدیق ممکن ہے لیکن عدالت نے اسے نہیں مانا اور اب ایسے میں کانگریس ایک ایک ووٹر کی تصدیق کرکے الیکشن کمیشن کے سامنے رکھے گی۔جسٹس ارجن کمار سکری اور جسٹس اشوک بھوشن کی بنچ نے ووٹر لسٹ ٹیکسٹ موڈ میں دستیاب کرانے سے متعلق مسٹر پائلٹ کا مطالبہ بھی ٹھکرادیا ہے۔ عدالت نے گذشتہ پیر کو سماعت مکمل کرنے کے بعد فیصلہ محفوظ رکھ لیا تھا۔مسٹر کمل ناتھ نے ووٹر لسٹ میں مبینہ گڑبڑی کی سی بی آئی انکوائری کرانے اور دس فیصد بوتھوں پر وی وی پیٹ کا اچانک معائنہ کرانے کی عدالت سے درخواست کی تھی جب کہ مسٹر پائلٹ نے فہرست کو ٹیکسٹ موڈ میں دستیاب کرانے کا مطالبہ کیا تھا۔الیکشن کمیشن نے سابقہ سماعت کے دوران عدالت کو بتایا تھا کہ پہلی ووٹر لسٹ کا مسودہ اس سال جنوری میں تیار ہوگیا تھا جب کہ مئی میں اس میں ترمیم کی گئی ۔ ووٹر لسٹ درست کردی گئی ہے ۔ عرضی گذاروں نے اسمبلی الیکشن سے عین قبل ووٹر لسٹ میں فرضی نام شامل ہونے کا الزام لگایا تھا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں