1

کانگریس کا الزام، شمالی ہندوستانیوں پر حملہ روپانی حکومت کی سازش

نئی دہلی ،12؍ اکتوبر (آئی این ایس انڈیا) کانگریس نے گجرات میں شمالی ہند کے لوگوں پر حملے کو’ وزیراعلیٰ وجے روپانی کی سازش‘ قرار دیا اور جمعہ کو کہا کہ ریاست کی بی جے پی حکومت کو برطرف کر کے صدر راج نافذ کیا جائے۔پارٹی کے سینئر لیڈر اور ترجمان شکتی سنگھ گوہل نے گجرات بی جے پی کے کچھ لیڈروں اور ممبران اسمبلی کی مبینہ فیس بک پوسٹ اور ’اشتعال انگیز‘ ویڈیو جاری کرتے ہوئے یہ دعوی کیا کہ مرکز اور ریاستی حکومت کی ناکامیوں کو چھپانے اور گجرات میں نوجوانوں کی ناراضگی سے توجہ بھٹکانے کے لئے شمالی ہند کے لوگوں کو نشانہ بنایا۔کانگریس ممبر اسمبلی الپیش ٹھاکور پر تشدد بھڑکانے کے الزامات کو مسترد کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ اگر ٹھاکور کے خلاف ثبوت ہے تو حکومت ان پر مقدمہ درج کرکے گرفتار کرے۔گوہل نے بتایاکہ حال ہی میں گجرات میں جو ہوا اسے لے کر ہر سچا گجراتی شرم محسوس کر رہا ہے۔ہماری ثقافت اس طرح کی نہیں ہے۔گجرات میں لوگ جہاں کہیں سے آتے ہیں، اس ریاست کے لوگ دل میں بسا لیتے ہیں۔انہوں نے کہاکہ مودی حکومت اور گجرات حکومت مختلف مسائل پر گھری ہوئی ہیں۔ گجرات میں غم و غصہ ہے۔اس سے توجہ بھٹکانے اوراپنی ناکامیوں کو چھپانے کے لئے یہ سازش رچی گئی۔یہ وزیر اعلی روپانی کی سازش ہے۔گوہل نے کہاکہ وزیر اعظم گجرات سے آتے ہیں اور اتر پردیش سے الیکشن جیتتے ہیں۔2014 کی ان کی جیت میں اتر پردیش، بہار اور مدھیہ پردیش کا اہم کردار رہا۔ایسے میں وزیر اعظم اس پر بولیں اور روپانی حکومت کو برخاست کرکے صدر راج نافذ کریں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں