1

سیلاب زدگان کو بلاتاخیر معاوضہ دیا جائے :مولانا محمود مدنی

سیلاب زدگان کو بلاتاخیر معاوضہ دیا جائے
جمعیۃ علماء ہند کے وفد کی کیرالہ کے وزیراعلیٰ سے ملاقات، مطالبات پر مشتمل میمورنڈم پیش کیا
ترویندرم؍ نئی دہلی10اکتوبر(آئی این ایس انڈیا) کیرالہ سیلاب زدگان کے لیے روز اول سے ریلیف و بازآبادکاری کا کام کرنے والی تنظیم جمعیۃ علماء ہند کے جنرل سکریٹری مولانا محمود مدنی کی ہدایت پر ایک وفد نے کیرالہ کے وزیر اعلی پنارائی وجین سے ترویندرم میں ان کے دفتر پر ملاقات کی ۔ وفد میں مولانا حکیم الدین قاسمی سکریٹری جمعیۃ علماء ہند ،مولانا ابراہیم ، مولانا سفیان قاسمی ،مولانا ز کریا، ایڈوکیٹ شہاب الدین ،مولانا شبیر،حاجی افضل سیٹھ،مولانا راشد،عبدالنافع زمزم شریک تھے۔جمعیۃ کے وفد نے وزیر اعلی کے سامنے ایک میمورنڈم بھی پیش کیا جس میں خاص طور سے مطالبہ کیا کہ سیلاب زدگان کو بلاتاخیر معاوضہ دیا جائے تاکہ وہ اپنا آشیانہ تعمیر کرسکیںکیو ںکہ وہ بارش کے دور میں کافی دنوں تک بے گھر نہیں رہ سکتے نیز جن کے اہل خانہ سیلاب میں جاں بحق ہوگئے ہیںان کو بھی مناسب معاوضہ دیا جائے ۔واضح ہو کہ ریاستی سرکار نے معاوضہ کا اعلان کیا ہے لیکن تاحال اکثر اس کے فوائد سے محروم ہیں ۔وفدنے بتایا کہ جمعیۃ علماء ہند نے بھی پانچ کروڑ سے زائد کا کام کیا ہے ، اور اب انتہائی ضرورت مندوں کے لیے پہلے مرحلے میں سو نئے مکانات بھی بنارہی ہے نیز سو مکانات کی مرمت کا بھی بیڑا اٹھایا ہے ۔ ہماری تنظیم کے جنرل سکریٹری مولانا محمودمدنی صاحب یہاں سیلاب زدگان سے دوبار مل چکے ہیں اور ضرورت مندوں کے تعاون کے لیے مسلسل کوشاں ہے، انھوں نے موثر کام کے لیے تین زون کی الگ الگ ریلیف کمیٹی بھی تشکیل دی ہے ۔ ہم آپ سے استدعا کرتے ہیں کہ آ پ جمعیۃ کی بازآبادکاری سرگرمی میں تعاون کریں اور ہماری تنظیم کی ریلیف کمیٹی کو سرکاری طور سے ریلیف ورک کرنے والے ادارے کی فہرست میں شامل کیا جائے تا کہ ہمارے ذمہ داران ریلیف کمشنر سے ملاقات کرکے اپنے کام میں ہورہی دشواریوں کو بسہولت حل کراسکیں ۔مولانا حکیم الدین قاسمی نے بتایاکہ وزیراعلیٰ نے جمعیۃ علماء ہند کی عرض داشت کو بغور سنا اورجمعیۃ کی ہمہ گیر خدمات کی ستائش کی بالخصوص مصبیت زدگان کی امداد میں اس کے کارکنان کی جم کر تعریف کی اور وعدہ کیا کہ مطالبات پر جلد عمل کو یقینی بنائیں گے۔ وزیراعلیٰ نے فوری طورسے جمعیۃ کے وفد کی اپنے سکریٹری سے بھی ملاقات کرائی تاکہ کسی مسئلے کے حل کے لیے بلا روک ٹوک رسائی حاصل کی جاسکے۔

کیٹاگری میں : هوم

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں